ٹھٹہ کے قریب سمندرمیں کشتی الٹنے سے 6 افراد جاں بحق

Download PDF

ship-capsized-thatta-bohra-community
ٹھٹہ: موھارا کےقریب سمندرمیں کشتی الٹنےسے داؤدی بوہرہ برادری کے کم از کم 50 افراد ڈوب گئے ہیں.

اطلاعات کے مطابق تمام اضلاع کی انتظامیہ اورریسکیوٹیمیں متاثرہ علاقے میں پہنچ چکی ہیں لیکن ڈر ہے کہ متعدد افراد اپنی جان سے ہاتھ دھوبیٹھیں گے. یہ مذہبی زائرین مینہ پتھاہی کے سالانہ میلے میں شرکت کے لیے جا رہے تھے جو کہ ایک مقامی بزرگ ہیں اوران کا مزارضلع ٹھٹہ کے علاقہ میرپورسکرو میں واقع ہے.

اس سال جولائی میں سیلاب کی تیاریوں کے دوران ڈیرہ غازی خان کے قریب دریائے سندھ میں کشتی الٹنے کے نتیجہ میں تین پولیس اہلکارجاں بحق ہوگئے تھے جبکہ ان کے تین ساتھیوں کوبچا لیا گیا. پولیس کے ترجمان کے مطابق 6 پولیس اہلکاردریائے سندھ کے غازی گھاٹ میں کشتی میں سوارتھے لیکن بدقسمتی سے کشتی الٹ گئی اوروہ دریا میں گرگئے.

اس حادثہ کے نتیجہ میں ہیڈ کانسٹیبل اسلم، علی حمزہ اورکانسٹیبل تیمورنوازڈوب گئے تھے. اس واقعہ کے کچھ ہی دیربعد ریسکیواہلکارموقع پرپہنچ گئےاورباقی تین پولیس اہلکاروں کو دریا سے نکال کرغازی ٹیچنگ ہسپتال میں منتقل کردیا گیا تھا. ان کی شناخت اعجاز، بلال اورانیس کے نام سے ہوئی تھی.

اپنا تبصرہ بھیجیں