ڈولفن فورس کے خلاف خواتین کوہراساں کرنے کا مقدمہ درج

dolphin-force-harrasment-case
لاہور: جمع کے روز ڈولفن فورس کے خلاف پنجاب فوڈ اتھارٹی کی خواتین اہلکاروں کو ہراسان کرنے کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے.

پنجاب فوڈ اتھارٹی کی سیفٹی آفیسرصائمہ اکرام نے صدرپولیس سٹیشن میں ڈولفن فورس کے خلاف ایف آئی آردرج کروائی. ایف آئی آرکے متن کے مطابق چند مسلح افراد، جعلی صحافیوں اورڈولفن فورس کے اہلکاروں نے صوبائی فوڈ اتھارٹی کی گاڑی روکی اوراس میں موجود خواتین اہلکاروں کوہراساں کیا. ایف آئی آر میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ انہوں نے زبردستی گاڑی میں گھسنے کی کوشش بھی کی.

پنجاب کی ڈولفن فورس 2016ء‌ میں ترکی کے تعاون سے شروع کی گئی تھی. اس کی بنیاد ترک نیشنل فورس پررکھی گئی تھی جس کا مقصد تنگ گلی اورمحلوں میں گشت کرنا تھا.

حکومت پنجاب نے اس فورس کی کارگردگی میں اضافہ کرنے کی خاطراربوں روپے خرچ کیے ہیں اورانہیں جدید آلات سے لیس کیا ہے تاکہ وہ صوبے میں جرائم کے خلاف مؤثرکاروائی کرسکیں.

اپنا تبصرہ بھیجیں