hafizabad-bone-marrow-case

حافظ‌‌ آباد بون میروکیس میں 16 نئے متاثرین کا انکشاف

hafizabad-bone-marrow-case
حافظ آباد: عورتوں کا بون میرونکال کربلیک مارکیٹ میں فروخت کرنے والے گینگ کے کم ازکم 16 نئے متاثرین سامنے آنے کا انکشاف ہوا ہے.

حافظ آباد کے ڈی ایچ کیو ہسپتال کے میڈیکل سپرانٹنڈنٹ کے مطابق متاثرہ خواتین کو ہسپتال میں منتقل کردیا گیا ہے جہاں ڈاکٹران کا طبی معائنہ کرکے یہ جاننے کی کوشش کریں گے کہ آٰیا اس گینگ نے ان خواتین کا بون میرو نکالا ہے یا نہیں. ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ ان خواتین کی گردن پرٹیکوں کے نشانات ملے ہیں.

چارلوگوں پرمشتمل اس گینگ کوپیرکے روز گرفتارکیا گیا تھا. یہ گینگ طبی معائنے کے بہانے خواتین کی مرضی کے بغیران کا بون میروحاصل کرتے تھے.

ایک سترہ سالہ متاثرہ لڑکی کے والد نے پولیس کواطلاع دی کہ کچھ لوگوں نے ان کی بیٹی کا سیمپل حاصل کیا ہے. یہ لوگ خود کو ہسپتال کا ملازم ظاہرکررہے تھے اوران کا کہنا تھا کہ بون میروکا سیمپل حاصل کرنا طبی معائنے کا لازمی حصہ ہے. اس کے علاوہ انہوں نے متاثرہ لڑکی کی مالی امداد کرنے کی یقین دہانی بھی کروائی تاکہ اس کا جہیزبنایا جا سکے.

لڑکی کے والد کے مطابق گھرواپس آنے کے بعد ان کی بیٹی نے خود کو کافی کمزورمحسوس کرنا شروع کردیا جس کے بعد اس نے پولیس کواطلاع کی اورساتھ ہی اس جگہ کا پتہ بھی دیا جہاں پران کی بیٹی کا طبی معائنہ کیا گیا تھا. پولیس نے محلہ بہاولپورہ میں چھاپا مارکرگینگ کوگرفتارکرلیا.

ایس ایچ او حافظ‌ آباد کا کہنا ہے “گینگ کے ارکان خود کو ڈی اچ کیوہسپتال کا ملازم ظاہرکرتے تھے. اس گینگ میں تین مرداورایک عورت شامل ہے. ہمیں متاثرہ لڑکی کے والد نے اس بارے میں آگاہ کیا کہ اسے بیٹی کا جہیز بنا کردینے کا لالچ دیا گیا تھا”.

ڈی پی او حافظ آباد نے اعلان کیا ہے کہ وہ اگلے تین دنوں میں اس کیس کی تحقیقت مکمل کرلیں گے.

اپنا تبصرہ بھیجیں