سلمان خان کوکالے ہرن کے شکارکے جرم میں پانچ سال قید کی سزا

salman-khan-sentenced-five-years
راجھستان: بالی وڈ کے معروف اداکارسلمان خان کوایک بھارتی عدالت نے نایاب کالے ہرن کے شکارکے جرم میں پانچ سال سزا سنا دی ہے. سلمان خان نے یہ کالے ہرن 1998ء میں شکارکیے تھے.

جودھپورکی عدالت نے پانچ سال قید کی سزا کے ساتھ ساتھ سلمان خان کو 10،000 بھارتی روپے کا جرمانہ بھی کیا ہے.سلمان خان کوعدالت کے باہرسے گرفیا ہتارکرلیا گیا ہے اوراب انہیں جیل منتقل کیا جائے گا.

سلمان خان نے 1998ء میں راجھستان کی مغربی ریاست میں اپنی ایک فلم کی شوٹنگ کے دوران دو کالے ہرنوں کا شکارکیا تھا. یہ کالے ہرن نہ صرف انتہائی نایاب ہیں بلکہ بھارتی حکومت نے ان کےشکارپربھی پابندی عائد کررکھی ہے. سلمان خان جن کی عمراب 52 سال ہے اعلیٰ عدالت میں اس فیصلے کے خلاف اپیل کرسکتے ہیں.

اس مقدمہ میں سلمان خان کے ساتھ تبو، سیف علی خان، سونالی باندرے اورنیلم بھی شامل تھے لیکن ان سب کو بری قراردے دیا گیا تھا. بھارتی میڈیا کے مطابق سلمان خان کوابھی کچھ دن جیل میں گزارنے پڑسکتے ہیں.

سلمان خان پرممنوعہ جانوروں کے شکارکا یہ پہلا مقدمہ نہیں ہے بلکہ اس سے پہلے بھی وہ 1998ء میں فلم ہم ساتھ ساتھ ہیں‌ کی شوٹنگ کے دوران اس طرے کے تین مقدمات میں ملوث رہ چکے ہیں لیکن ان سب مقدمات میں عدالت نے انہیں بری قراردیا ہے.

اس سے پہلے 2006ء میں ایک ٹرائیل کورٹ نے سلمان خان کودومقدمات میں الزام دہ ٹھہرایا تھا اورانہیں پانچ سال کی قید سنائی تھی. لیکن راجھستان ہائی کورٹ نے اگلے سال یہ سزا معطل کردی تھی اورپھر2016ء میں انہیں مکمل بری قراردے دیا گیا تھا. ریاستی حکومت نے اس فیصلہ کے خلاف بھارتی سپریم کورٹ میں‌ اپیل دائرکردی.

سلمان خان کے خلاف اس مقدمہ کے اصل مدعی مقامی بشنوئی برادری ہے. اس برادری کے نزدیک کالے ہرن انتہائی مقدس جانورہیں اوریہ ان کی پوجا بھی کرتے ہیں.

اپنا تبصرہ بھیجیں