پاکستانی ویٹ لفٹرنے کامن ویلتھ گیمزمیں کانسی کا تمغہ جیت لیا

pakistani-weightlifter-nooh-butt-wins-bronze-commonwealth
کوئینزلینڈ: آسٹریلیا کے شہرکوئینزلینڈ میں جاری کامن ویلتھ گیمز میں پاکستان نے پیرکے روزایک اورتمغہ اپنے نام کیا جب نوح دستگیربٹ نے ویٹ لفٹنگ میں کانسی کا تمغہ جیتا. نوح دستگیربٹ کی عمرصرف 20 سال ہے اورپچھلے سال کامن ویلتھ گیمزمیں انہوں نے چاندی کا تمغہ اپنے نام کیا تھا. اس سال نوح بٹ نے کل 395 کلوگرام وزن اٹھا کرملک کے لیے کانسی کا تمغہ جیتا.

ویٹ لفٹنگ میں دو طریقوں سے وزن اٹھایا جاتا ہے سنیچ اورکلین اینڈ جرک. سنیچ میں وزن کوایک ہی بار میں سرسے اوپراٹھانا ہوتا ہے جبکہ کلین اینڈ جرک میں وزن کوپہلے کندھوں تک اٹھایا جاتا ہے اورپھرسرکے اوپر. نوح بٹ نے سنیچ طریقہ سے 173 کلوگرام وزن اٹھایا جکہ کلین اینڈ جرک طریقہ سے 222 کلوگرام وزن اٹھا کرانہوں نے میڈل اپنے نام کیا.

نوح بٹ نے سونے کا تمغہ جیتنے کے لیے پہلے 228 کلوگرام وزن اٹھانے کی کوشش کی اورپھر231 کلوگرام وزن کی لیکن وہ دونو بارہی ناکام رہے. نوح بٹ نے کل 395 کلوگرام وزن اٹھا کرکامن ویلتھ جونیئرریکارڈ بھی بنایا ہے. کامن ویلتھ گیمز2018ء میں یہ پاکستان کا دوسرا میڈل ہے اوردونوں میڈل ویٹ لفٹرز نے ہی جیتے ہیں. پچھلے ہفتہ طلحہ حبیب نے بھی 62 کلوگرام کیٹگری میں کانسی کا تمغہ جیتا تھا.

شئیرکرکے اپنے دوستوں تک پہنچائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں