آسٹریلوی انجینئرنے خودکشی میں مددکرنے والی مشین تیارکرلی

suicide-machine
آسٹریلیا: ایک نئی لیکن متنازعہ خودکشی مشین ایجاد کی گئی ہے جوصرف ایک بٹن دبانے سے انسان کوموت کی آغوش میں لے جائے گی.

اس مشین کا نام ‘سارکو’ ہے اوراسے رحمانہ قتل (Euthanasia) کی تحریک چلانے والےایک آسٹریلوی باشندے فلپ نچکی اورڈچ ڈیزائنرالیگزینڈرباننک نے ٹھری ڈی پرنٹنگ ٹیکنالوجی کے ذریعے تیارکیا ہے. اس مشین کے ساتھ ایک تابوت بھی آتا ہے جسے الگ کیا جا سکتا ہے جبکہ نائٹروجن سے بھرا کنستربھی مشین کے ساتھ ایک سٹینڈ پرلگا ہوتا ہے.

فلپ نچکی Euthanasia کوقانونی قراردلوانا چاہتے ہیں جس کی وجہ سے انہیں ‘ڈاکٹرڈیتھ’ کے نام سے بھی جانا جاتا ہے، ان کا کہنا ہے “ایسا شخص جوکہ مرنا چاہتا ہے وہ اس مشین میں داخل ہوکرصرف ایک بٹن دبائے گا جس سے یہ مشین نائٹروجن گیس سے بھرجائے گی. اس شخص کوہلکی سی غنودگی محسوس ہوگی لیکن پھروہ فوراًَ بے ہوش ہوجائے گا جس کے بعد اس کی موت واقع ہوجائے گی”.

ایک انٹرویوکے دوران فلپ نچکی نے کا کہنا تھا کہ ان کی مشین سارکوکا مقصد ایسے لوگوں‌ کوموت فراہم کرنا ہےجوکہ مزید زندہ نہیں رہنا چاہتے. فلپ کا کہنا ہے کہ وہ اس مشین کا مکمل طورپرکام کرنے والے ماڈل کی اس سال کے آخرتک تعمیرمکمل کرلیں گے.

اپنا تبصرہ بھیجیں