علی ظفرنے میشا شفیع کو100کروڑروپے کا ہرجانہ نوٹس بھجوادیا

ali-zafar-sue-meesha-shafi
لاہور: موسیقارواداکارعلی ظفرکے وکیل نے میشا شفیع کو100 کروڑہرجانے کا نوٹس بھجوادیا ہے.

میشا شفیع نے 19 اپریل کوٹویٹرکے ذریعے علی ظفرپرجنسی ہراسانی کا الزام عائد کیا تھا. میشا شفیع نے اپنے ٹویٹوپیغام میں لکھا “میں اپنے ہی ساتھی علی ظفرکے ہاتھوں متعدد بارجنسی ہراسانی کا نشانہ بن چکی ہوں. یہ میرے اورمیرے خاندان کے لیے انتہائی ہولناک تجربہ تھا. مجھے علی ظفرکے اس عمل سے بہت مایوسی ہوئی ہے اورمیں جانتی ہوں کہ اوربہت سے لڑکیاں بھی اس تجربے سے گزرچکی ہیں”.

علی ظفر نے اسی دن ان الزامات کی تردید کرتے ہوئے کہا “میں میشا شفیع کے جانب سے لگائے گئے تمام الزامات کی مکمل تردید کرتا ہوں”.

اطلاعات کے مطابق علی ظفرنے ہرجانے کے نوٹس میں یہ مانگ کی ہے کہ میشا شفیع اپنے الزامات پرمبنی ٹویٹرپیغامات ڈیلیٹ کریں اورٹویٹرپرہی علی ظفرسے مانگیں، ایسا نہ کرنے کی صورت میں وہ میشا شفیع پر100 کروڑروپے کا ہرجانہ کریں گے.

میشا شفیع کے وکیل بیرسٹرمحمد احمد پنسوٹا نے کہا “ہمیں ہرجانے کا نوٹس موصول ہوچکا ہے اورہم اس کے متن کی جانچ کررہے ہیں. میشا شفیع نے علی ظفرپرجوالزامات عائد کئے ہیں وہ سچائی پرمبنی ہیں، اس لئے ہم اس نوٹس کو رد کرتے ہیں”.

شئیرکرکے اپنے دوستوں تک پہنچائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں