Waseem-Akhtar

بارہ مئی کیس؛ میئر کراچی وسیم اختر سمیت دیگر ملزمان پر فرد جرم عائد

کراچی: انسدادِ دہشتگردی عدالت نے سانحہ بارہ مئی کیس میں میئر کراچی اور متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان کے رہنما وسیم اختر سمیت 21 ملزمان پر دوسرے مقدمے میں بھی فرد جرم عائد کردی۔

کراچی کی انسدادِ دہشتگردی کی خصوصی عدالت میں سانحہ بارہ مئی کے مقدمات کی سماعت ہوئی۔ میئر کراچی وسیم اختر سمیت 21 ملزمان عدالت میں پیش ہوئے۔ خصوصی عدالت نے 4 مقدمات میں سے ایک مقدمے میں ملزمان پر فردِ جرم عائد کردی تاہم تمام ملزمان نے صحتِ جرم سے انکار کیا۔ صحتِ جرم سے انکار پر عدالت نے گواہوں کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 27 اکتوبر کو طلب کرلیا۔

ملزمان کے خلاف 4 مقدمات ائیرپورٹ تھانے میں درج کئے گئے تھے جن میں سے مقدمہ نمبر 86/2007 میں فردِ جرم عائد کی گئی ہے جب کہ اس سے پہلے بھی ایک کیس میں فرد جرم عائد کی جاچکی ہے۔ عدالت مذکورہ مقدمے کے 9 مفرور ملزمان کو اشتہاری بھی قرار دے چکی ہے۔

واضح رہے کہ 12 مئی 2007 کو سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف کے دور آمریت میں وکلا تحریک کے دوران معزول چیف جسٹس افتخار چوہدری کی کراچی آمد پر سیاسی جماعت کے کارکنوں کی فائرنگ سے وکلا سمیت کم از کم 50 افراد جاں بحق ہوگئے تھے۔