عدلیہ پر دباؤ ڈال کر مرضی کے فیصلے کرانا خطرناک ہوگا، خورشید شاہ

سکھر: پیپلز پارٹی کے رہنما خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ عدلیہ پر دباؤ ڈال کر مرضی کے فیصلے کرائے جائیں گے تو یہ خطرناک ثابت ہوں گے۔

سکھر میں ہائی کورٹ بار سے خطاب کرتے ہوئے پی پی پی رہنما سید خورشید شاہ کا کہنا تھاکہ عمران خان نے غیر سنجیدہ بیانات دیے، اب ان کے بیانات کا مذاق اڑایا جارہا ہے، عمران خان کہتے تھے کہ آئی ایم ایف جانے سے بہتر ہے خودکشی کرلیں، کل ملک کے لیے خطرہ قرار دینے والی جماعت کو وزارت دے دی گئی، اگر ایم کیوایم حکومت سے نکل جائے تو حکومت کا خدا حافظ ہوجائے گا۔

پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما کا کہنا تھا کہ معیشت پرخطرناک حد تک دباؤ ہے، دو ماہ میں اربوں روپے کا نقصان ہوا، لوگ کنگال ہوگئے، عمران خان کے پاس 70 فیصد پرویز مشرف کی ٹیم ہے، جن کی سوچ بھی آمرانہ ہے، عدلیہ پر دباؤ ڈال کر مرضی کے فیصلے کرائے جائیں گے تو یہ خطرناک ثابت ہوں گے۔ پارلیمنٹ کی بالادستی ختم ہوتی نظر آرہی ہے لیکن ہم پھر بھی کوشش کررہے ہیں کہ حکومت اپنی آئینی مدت پوری کرے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں