میک بک ایئر، ڈیسک ٹاپ کمپیوٹر میک بک منی اور آئی پیڈ پرو کے جدید ماڈل متعارف

نیو یارک میں امریکی کمپنی ایپل نے رواں سال کی دوسری بڑی تقریب کے دوران معروف نوٹ بک میک بک ایئر، ڈیسک ٹاپ کمپیوٹر میک بک منی اور آئی پیڈ پرو کے جدید ماڈل متعارف کرادیے۔

تقریب میں ایپل کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ٹم کوک نے میک بک ایئر کی تعریف کرتے ہوئے اسے سب سے زیادہ پسند کی جانے والی نوٹ بک قرار دیا۔

انہوں نے بتایا کہ ایپل کے میک بک ایئر میں 13.3 انچ کی ہائی ریزولیشن ریٹینا ڈسپلے دیا گیا جس میں کوئی المونیم بیزل نہیں۔

میک بک ایئر کی اسکرین کے ساتھ سیاہ رنگ کا بارڈر ہے تاہم اس کا گلاس اسکرین کے کناروں تک دیا گیا ہے جیسا میک بک پرو لیپ ٹاپ میں دیا گیا تھا۔

میک بک ایئر کی اسکرین کے اوپر فیس ٹائم ایچ ڈی کیمرہ بھی نصب کیا گیا ہے۔

ایپل نے میک بک ایئر کو ان لوک کرنے کے لیے اس میں فنگر پرنٹ ریڈر جبکہ تھرڈ پارٹی کے لیے ایپل نے ایک پاسورڈ متعارف کرایا ہے۔

نوٹ بک میں ‘کی بورڈ’ کے پیچھے ایک خوبصورت لائٹ دی گئی ہے جبکہ ٹریک پیڈ کو گزشتہ ماڈل سے 20 فیصد بڑھایا گیا ہے جس کے ذریعے صارفین کو اسکرول کرنے میں مزید آسانی ہوگی۔

ڈیوائس میں 3 ایپل کی مخصوص تھنڈر بولٹ 3.0 پورٹس دی گئی ہیں جو ڈیٹا کی منتقلی، چارجنگ، ایچ ڈی ایم آئی وغیرہ کے لیے استعمال کی جاسکتی ہیں۔

میک بک ایئر میں انٹیل کا 8ویں جنریشن کا کور آئی 5 پراسیسر نصب کیا گیا ہے اور اس میں 16 جی بی تک کی ریم اور 1.5 ٹی بی تک کا اسٹوریج دیا گیا ہے۔

میک بک میں پہلے سے مزید بہتر بیٹری دی گئی اور ایپل کا دعویٰ ہے کہ ایک مرتبہ چارج کیے جانے پر یہ 12 گھنٹے تک کی براؤسنگ دے سکتا ہے۔

ایپل نے میک بک ایئر کی قیمت 1199 ڈالر تقریباً ایک لاکھ 50 ہزار پاکستانی روپے رکھی ہے جسے 7 نومبر کو فروخت کے لیے پیش کیا جائے گا۔

ایپل نے تقریب کے دوران کئی سالوں سے کمپنی کی جانب سے نظر انداز کیے جانے والے ڈیسک ٹاپ کمپیوٹر میک بک منی کا اپڈیٹ بھی متعارف کرایا۔

اس نئے کمپیوٹر میں ایپل نے ‘ان ٹیل’ کے 8ویں جنریشن کا پروسیسر نصب کیا جس میں 64 جی بی ریم اور 2 ٹی بی تک کی اسٹوریج دی گئی ہے۔

میک منی میں گیگا بٹ ایتھرنیٹ پورٹ اور تھنڈر بولٹ 3 پورٹ بھی دیا گیا ہے جس کی قیمت ایپل نے 799 ڈالر جو تقریباً پاکستانی روپے ایک لاکھ سے زائد مقرر کی ہے۔

اس کے سائز کے حوالے سے ایپل نے بتایا کہ اسے ایک ہاتھ میں بھی با آسانی پکڑا جاسکتا ہے۔

ایپل نے اعلان کیا کہ اس کی ڈیوائس میک منی کو 100 فیصد ری سائیکل المونیم سے تیار کیا گیا ہے۔

امریکی کمپنی نے آئی پیڈ کا بھی جدید ورژن متعارف کرایا جس میں گزشتہ ہوم بٹن کا خاتمہ کرتے ہوئے فیس آئی ڈی دی گئی۔

ایپل کا کہنا تھا کہ نئے آئی پیڈ پرو میں لیکوئڈ ریٹینا ڈسپلے کو استعمال کیا گیا ہے جو آئی فون ایکس آر میں دیا گیا تھا اور اس کے اسکرین کو گزشتہ ماڈل سے آدھے انچ بڑھا کر 11 انچ اور 12.9 انچ تک کردیا گیا ہے۔

نئے آئی پیڈ میں گزشتہ ماہ ایپل کی جانب سے متعارف کرائے گئے آئی فون ایکس ایس جیسے تمام فیچرز دیے گئے ہیں جیسے اس میں ایپل کا مخصوص اے 12 ایکس بائیونک چپ سیٹ شامل ہے۔

ٹم کک کا ماننا ہے کہ ایپل کا آئی پیڈ پرو گزشتہ سال فروخت ہونے والے 92 فیصد پرسنل کمپیوٹر سے زیادہ تیز ہے اور اس میں نصب چپ سیٹ دوگنی گرافکس دیتا ہے جو مائیکروسوفٹ کے ایکس بوکس ون ایکس جیسی گرافکس پرفارمنس ہے۔

ایپل نے آئی پیڈ کی بیٹری کے حوالے سے دعویٰ کیا کہ اسے ایک مرتبہ چارج کرنے پر پورے دن کے لیے با آسانی استعمال کیا جاسکتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں