ریاست بغاوت کو نظرانداز نہیں کرسکتی: فواد چودھری

کراچی: وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے کہاہے کہ دھرنا شرپسندوں کو ریاست بھولے گی نہیں، یہ مذہب نہیں سیدھا سادھا بغاوت کا معاملہ ہے اور بغاوت کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا۔کراچی میں سیمینار سے خطاب ، میڈیاسے بات چیت اور پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکمت عملی کے تحت دھرنے کے معاملے کو نمٹایا۔یہ تاثر غلط ہے حکومت نے دھرنا دینے والوں کے سامنے گھٹنے ٹیک دیئے ۔ مذہب کے نام پر جو کچھ کیا گیا وہ بغاوت کے زمرے میں آتا ہے ۔ تحریک لبیک کیساتھ معاہدے سے حکومت کی کمزوری کا تاثر دیا جارہا ہے ، اس تاثر کو دور کرنے کیلئے اقدامات کریں گے ۔کسی کو غلط فہمی نہیں ہونی چاہئے کہ حکومت شرپسندوں کو معاف کردے گی۔ احتجاج میں فوج، عدلیہ اور حکومت کو نشانہ بنایا گیا، ریاست اسے نظرانداز نہیں کرے گی۔ ایک سوال پر ان کا کہنا تھا کہ احتجاج کے دوران جو تقاریر کی گئیں اور جو اس میں ملوث ہے ریاست اسے نہیں بھولے گی، یہ معاملہ مسلک کا نہیں بغاوت کا ہے ، کیا ریاست کو بغاوت کو نظرانداز کردینا چاہئے ؟ بغاوت کو نظرانداز کرنے والی ریاست پر سوالیہ نشان لگ جاتا ہے ۔فواد چودھری نے سندھ حکومت سے متعلق بیان کی تردید کرتے ہوئے کہا میں نے یہ نہیں کہا تھا پیپلز پارٹی کی حکومت چند دن کی مہمان ہے ۔پتہ نہیں کیوں ہم جب بھی چوروں اور لٹیروں کیخلاف بات کرتے ہیں تو خورشید شاہ ناراض ہوجاتے ہیں، وہ کہتے ہیں ناں کہ چور کی داڑھی میں تنکا۔ پیپلزپارٹی اب زرداری کی پارٹی ہے ، اس کا بھٹو سے ایسا ہی تعلق ہے جیسا زمین کا آسمان سے ، سندھ حکومت سے پوچھیں وفاق سے 75 ہزار کروڑ روپے صوبے میں منتقل ہوئے ، وہ کہاں گئے ۔ کبھی فالودہ اورکبھی رکشہ والے کے پاس سے اربوں روپے نکل آتے ہیں۔ سندھ میں غندہ راج ہے ، ہمیں گورنر راج لگانے کی ضرورت نہیں ۔ عوام سے جو وعدے کئے پورے کریں گے ، ستر دنوں میں آلو کی فصل تیار نہیں ہوتی اور ہم سے کارکردگی مانگی جا رہی ہے ۔فواد چودھری نے مک مکا یا کسی این آر او سے متعلق خبروں کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ کسی کو معاف کرنے یا ڈیل کرنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا، ہمیں احتساب کرنے کا ہی مینڈیٹ ملا ہے ، آصف زرداری ہوں یا نواز شریف ، کسی کو نہیں بخشیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت سندھ حکومت کو ساتھ لے کر چلنا چاہتی ہے ۔اگر وفاقی حکومت سندھ حکومت کے ساتھ عدم تعاون کرے تو سندھ حکومت کیلئے مشکلات پیدا ہوجائیں گی لیکن سندھ کے حکمرانوں کو بھی چاہیئے کہ وہ اپنی ذمہ داریوں کو پہچانیں۔ آئندہ عام انتخابات میں سندھ سے دو تہائی اکثریت سے کامیابی حاصل کریں گے ۔ فواد چودھری نے کہا کہ چین اور پاکستان نئے سٹریٹجک دور میں داخل ہوگئے ہیں۔چین ہمیشہ سے پاکستان کو بہت اچھا دوست رہا ہے اور پاکستان کے ساتھ کندھا سے کندھا ملا کر چلا ہے ،جلد چین کے تعاون سے پاکستان اپنا پہلا خلاباز خلا میں بھیج رہا ہے ۔ فواد چودھری نے گورنر سندھ عمران اسمعٰیل سے ملاقات کی اور پی ٹی آئی کے پارلیمانی رہنماؤں کے اجلاس میں بھی شریک ہوئے ۔وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری آج دوپہر 12بجے پی آئی ڈی لاہور میں پریس کانفرنس کریں گے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں