اسٹیٹ بینک کی عوام کو کالز پر نجی معلومات نہ دینے کی ہدایت

کراچی: اسٹیٹ بینک آف پاکستان( ایس بی پی) نے بینکوں کے صارفین کو موصول ہونے والی جعلی کالز کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ اس قسم کی کالز پر کوئی معلومات فراہم نہ کی جائیں۔

مرکزی بینک کی جانب سے جاری پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ ’ایس بی پی عوام کو ہدایت کرتا ہے کہ اگر کوئی فرد انہیں بینک کا نمائندہ بن کر کال کرے تو وہ اسے اپنا قومی شناختی کارڈ نمبر، بینک اکاؤنٹ نمبر یا پاسورڈ وغیرہ جیسی کوئی معلومات نہیں دیں‘۔

بیان میں مزید کہا گیا کہ ’بارہا دیکھا گیا ہے کہ دھوکے باز لوگ عوام کو اسٹیٹ بینک یا کسی اور ادارے کا نمائندہ بن کرکال کرتے ہیں اور ان سے ان کے بینک اکاؤنٹس کی تفصیلات اور نجی معلومات مانگتے ہیں جبکہ نہ بتانے کی صورت میں ڈراتے ہیں کہ ا گر تفصیلات نہیں دیں یا معلومات کی تصدیق نہیں کی تو ان کا بینک اکاؤنٹ بند کردیا جائے گا ‘۔

’ایسی صورتحال میں عوام فوری طور پر قانون نافذ کرنے والے اداروں کو آگاہ کریں اس کے ساتھ اگر کسی قسم کی معلومات دے دیں ہیں تو کسی نقصان سے بچنے کے لیے فوری طور پر اپنے بینک سے رابطہ کریں ‘۔

مرکزی بینک کی جانب سے جاری بیان میں عوام کو واضح طور پر آگاہ کیا گیا ہے کہ’ کوئی بھی کمرشل یا مائیکرو فنانس بینک کبھی بھی صارفین سے فون پر اے ٹی ایم پن، قومی شناختی کارڈ نمبر، ون ٹائم پاس ورڈ(او ٹی پی)، اکاؤنٹ نمبر وغیرہ کی تفصیلات نہیں مانگتا‘۔

اسٹیٹ بینک نے ہدایت کی ہے کہ اس طرح کی کوئی بھی کال موصول ہونے کی صورت میں ہیلپ لائن 273-727-111-021 پر رابطہ کریں یا پھر cpd.helpdesk@sbp.org.pk پر ای میل کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں