چیف جسٹس کا علیمہ خان کی دبئی پراپرٹی پر ازخود نوٹس

علیمہ خان نے اپنی دبئی کی کروڑوں روپے مالیت کی مجموعی جائیداد کا 50 فیصد حصہ ایف بی آر کو دیا تھا۔

ایف بی آر کو جمع کرائی گئی رقم میں سے25 فیصد حصہ ٹیکس اور 25 فیصد جرمانے کے طور پر جمع کرایا تھا۔

اس سے قبل سابق وزیراعظم نوازشریف نے قومی احتساب بیورو (نیب) سے علیمہ خان کی جائیداد کی چھان بین کا مطالبہ کیا تھا۔

نوازشریف نے صحافیوں سے گفتگو میں کہا تھاکہ علیمہ خان کے پاس دبئی میں اربوں روپے کی جائیداد کہاں سے آئی؟ جائیداد چھپانے پر جرمانہ ادا کیا، یہ این آر او نہیں؟

اپنا تبصرہ بھیجیں