’’جام ساقی کو رہا کرو‘‘

’’عدلیہ کو آزاد کرو‘‘ ’’جمہوریت کو بحال کرو‘‘ ’’آمریت مردہ باد‘‘ ’’ریاست کےاندر ریاست مردہ باد‘‘ ’’انقلاب زندہ باد‘‘ یہ سب نعرے ابھی تک میرے کانوں میں گونج رہے ہیں۔ یہ 1986ء کی بات ہے۔ لاہور کے ریگل چوک میں مزید پڑھیں

موروثی سیاست بمقابلہ عروسی سیاست

جھوٹ بہت مقبول ہے۔ زعم مقبولیت میں کبھی چیختا ہے، کبھی غراتا ہے اور سینے پر ہاتھ مار مار کر پوچھتا ہے کہاں گئی تمہاری سچائی؟ آج کل آپ کے اردگرد ایک نہیں کئی جھوٹ ایک دوسرے کو للکارتے پھر مزید پڑھیں

عاصمہ جہانگیر کی آخری مسکراہٹ

اس دنیا میں ایسے لوگ بہت کم نظر آتے ہیں جن کی تمام زندگی روایت شکنی میں گزرتی ہے اور پھر ان کی موت بھی روایت شکنی کی مثال بن جاتی ہے۔تمام زندگی فرسودہ روایات اور نظریات کے خلاف لڑنے مزید پڑھیں

سیاستدانوں کی اصل طاقت؟

25دسمبر خوشیاں منانے کا دن ہے لیکن یہ 25دسمبر خوشیوں کے ساتھ ساتھ کچھ نئی اُمیدیں بھی لے کر آیا ہے۔ وہ لوگ جو ہمیں سمجھایا کرتے تھے کہ اس دنیا میں کمزوروں کی بات کوئی نہیں سنتا یہ دنیا مزید پڑھیں

علما ء و مشائخ سے ایک درخواست

اُس کے لہجے میں اتنا تکلیف دہ طنز تھا کہ تیر بن کر میرے سینے میں پیوست ہو گیا۔ یہ مغربی سفارتکار اکثر میرے ساتھ گلابی اُردو بولتا ہے۔ اُس نے بڑی تیزی کے ساتھ اُردو اخبارات بھی پڑھنا سیکھ مزید پڑھیں