مائی لارڈ : رعایت کا وقت گزر چکا !

ابھی اگلے روز ہی چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار نے عدالت میںپوچھا کہ رئوف کلاسرا کدھر ہیں‘وہ خود عدالت میں موجود نہیں‘ لیکن اکثر اپنے ٹی وی شوز میں کہتے رہتے ہیں کہ عدالت اور ہم ججز کچھ مزید پڑھیں

چودھریوں کے ڈیرے پھر آباد ہو گئے

منگل کے روز گجرات کے مہمان نواز چودھریوں کے اسلام آباد میں واقع گھر کا وسیع ڈرائنگ روم ایک دفعہ پھر لوگوں سے بھرا ہوا تھا۔ یہ منظر میں پانچ برس بعد دوبارہ دیکھ رہا تھا۔ گھر کے اندر باہر مزید پڑھیں

عمران خان کو وزیراعظم کس نے بنوایا؟

پانچ سال بعد پھر لاہور میں پورا ایک ہفتہ گزرا۔ کل کی بات لگتی ہے جب دو ہزار تیرہ میں الیکشن ہورہے تھے۔ اس وقت بھی نئی امیدیں اور نئے خواب تھے۔ عمران خان اور نواز شریف آمنے سامنے تھے، مزید پڑھیں

گورنر سٹیٹ بینک طارق باجوہ اور 200 ارب ڈالرز کی کہانی

عامر متین نے اپنا فون میری طرف بڑھایا، آواز آئی: گورنر سٹیٹ بینک آف پاکستان طارق باجوہ ہیں، وہ دو سو ارب ڈالرز سوئس سٹوری پر موقف دینا چاہتے ہیں…جی میں طارق باجوہ بول رہا ہوں، میں نے دو ہزار مزید پڑھیں

اپنا اپنا میڈیا اور اپنے اپنے مشیر !

یہ پہلی دفعہ نہیں ہوا کہ عمران خان میڈیا پر ناراض ہیں۔ وہ اکثر اپنی تقریروں میں میڈیا پر تنقید کرتے رہتے ہیں۔ اس دفعہ وہ کہہ رہے ہیں کہ میڈیا ضمیر بیچ کر نواز شریف کو سپورٹ کررہا ہے۔ مزید پڑھیں

جنرل باجوہ ہمت کرسکتے ہیں تو ست بسم اللہ

بلوچستان میں ہونے والے قتلِ عام پر مجھے پیپلز پارٹی دور میں وزیراعظم گیلانی کی صدارت میں ہونے والا ایک کابینہ اجلاس یاد آگیا ۔ اس اجلاس میں اس وقت کے چیف سیکرٹری نے بریفنگ دی تھی کہ بلوچستان کے مزید پڑھیں

گیارہ برس قبل نواز شریف کا انقلاب اسلام آباد ایرپورٹ پر کھو گیا

نواز شریف کی بدھ کے روز لندن سے کی گئی پریس کانفرنس سن کر کئی پرانی یادیں ابھریں۔ گیارہ برس قبل 8 ستمبر 2007ء کا دن تھا اور یہی لندن کا ہوٹل جہاں اب انہوں نے پریس کانفرنس کی ہے۔ مزید پڑھیں

پانچ جولائی سے چھ جولائی تک

یقینا آپ سوچ رہے ہوں گے کہ ایک دن سے کیا فرق پڑتا ہے ؟میں کالم لکھ رہا ہوں تو پانچ جولائی ہے‘ جب چالیس برس قبل بھٹو حکومت کا تختہ الٹا گیا‘ جب انہوں نے ان جاگیرداروں کو پارٹی مزید پڑھیں

لیہ کا ڈاکٹر جاوید کنجال

لیہ سے ڈاکٹر جاوید اقبال کنجال کا فون آیا‘ آواز میں افسردگی تھی۔ بولے: بھائی رئوف! مجھے پیپلز پارٹی نے برطرف کردیا ہے۔ مجھے یہ افسردہ آواز 1985ء میں لے گئی‘ جب میری نانی گائوں میں بیمار تھی ۔ نعیم مزید پڑھیں