Sahiwal-Firing

ساہیوال فائرنگ، سی ٹی ڈی کی ساری کہانی جھوٹ نکلی

ساہیوال میں پولیس مقابلے کی کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ (سی ٹی ڈی) کی ساری کہانی جھوٹ نکلی۔

سینئر صحافی حامد میر کے مطابق تحقیقات اور شواہد کی بنیاد پر ضلعی انتظامیہ اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کو سب کچھ بتادیا۔

سینئر صحافی نے انکشاف کیا کہ شواہد اور تحقیقات کے بعد داعش رہنمائوں کی گرفتاری کے لئے مبینہ پولیس مقابلے کی کہانی جھوٹ نکلی ہے۔

جس کے بعد وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے ساہیوال میں مبینہ مقابلہ کرنے والے سی ٹی ڈی اہلکاروں کو حراست میں لینے کا حکم دیا۔

حامد میر کے مطابق پولیس فائرنگ سے 3 بچے اس لئے بچ گئے کیوں باپ اور ماں نے انہیں لپٹالیا تھا۔

ساتھ یہ انکشاف بھی سامنا آیا ہے کہ پولیس نے کرائم سین کو محفوظ کرنے کےلئے کوئی کام نہیں کیا،پولیس کے اس اقدام کو شواہد مسخ کرنے کی کوشش قرار دیا جارہا ہے۔

میڈیا سے گفتگو میں عینی شاہدین نے اس بات کی ایک بار پھر توثیق کی کہ کار سواروں نے کوئی فائرنگ نہیں کی اور نہ ہی کوئی مزاحمت کی گئی۔

اشتہار


اپنا تبصرہ بھیجیں