پوپ فرانسس کی پہلی بار عرب سرزمین آمد

کیتھولک چرچ کے سربراہ پوپ فرانسس جزیرہ نما عرب کا دورہ کرنے والے پہلے پوپ بن گئے جہاں انہوں نے متحدہ عرب امارات میں تاریخی اجتماع سے بھی خطاب کیا۔

متحدہ عرب امارات (یو ای اے ) نے ’ رواداری کے سال 2019‘ کے تحت پوپ فرانسس کو دورے کی دعوت دی تھی۔

انہوں نے تاریخی دورے میں ابو ظہبی کے ولی عہد، اماراتی وزیر برائے رواداری شیخ نہیان بن مبارک، قاہرہ کی جامعہ الازہر کے سربراہ شیخ احمد الطیب سے ملاقاتیں کیں۔

دورے کے دوران ابو ظہبی کے ولی عہد شیخ محمد بن زید نے متحدہ عرب امارات میں تعمیر ہونے والے پہلے چرچ کی زمین کی دستاویزات پوپ فرانسس کو تحفے کے طور پر پیش کی۔

پوپ فرانسس نے جواب میں ولی عہد کو مصر کے سلطان ملک الکمال اور سینٹ فرانسس اسیسی کے درمیان 1219 میں ہوئی ملاقات کا فریم کیا ہوا تمغہ پیش کیا۔

پوپ فرانسس اور شیخ احمد الطیب نے ’عالمی امن کے لیے بھائی چارے ‘ کی دستاویزات پر دستخط کیے اور اسے ’ عیسائیوں اور مسلمانوں کےدرمیان مذاکرات میں ایک اہم اقدام قرار دیا‘۔

انہوں نے متحدہ عرب امارات کی تاریخ میں پہلی مرتبہ کیتھولک کے عوامی اجتماع سے خطاب کیا جس میں ایک لاکھ 70 ہزار افراد نے شرکت کی۔

گزشتہ روز کیے گئے بین المذاہب خطاب میں انہوں نے یمن سمیت خطے میں جاری جنگوں کا خاتمہ، انصاف اور شہریوں کو برابری کی بنیاد پر حقوق کی فراہمی کی ضرورت پر زور دیا

اشتہار


اپنا تبصرہ بھیجیں