Donald-Trump

ایران باز آجائے یا پھر ‘خاتمے’ کیلئے تیار رہے، امریکی صدر کی دھمکی

صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے عراق کے دارالحکومت بغداد میں قائم امریکی سفات خانے کے قریب ہونے والے میزائل حملے کے بعد ایران کو خبردار کیا ہے کہ امریکا کو دھمکانے کا سلسلہ بند کریں یا پھر اپنے ‘خاتمے’ کے لیے تیار ہوجائیں۔

سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک ٹوئٹ میں کہا کہ ‘اگر ایران لڑنا چاہتا ہے تو یہ ایران کا واضح خاتمہ ہوگا، امریکا کو دوبارہ دھمکی نہ دی جائے’۔

خیال رہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کی ٹوئٹ ایسے موقع پر سامنے آئی ہے جب کچھ ہی روز قبل ایران پر امریکا کی معاشی پابندیوں کے بعد دونوں ممالک کے تعلقات مزید کشیدہ ہوگئے تھے اور واشنگٹن نے مشرق وسطیٰ میں بمبار طیارے اور طیارہ بردار جہاز تعینات کردیئے۔

واضح رہے کہ عراق کے دارالحکومت بغداد میں گرین زون میں قائم سفارت خانے کے قریب راکٹ آکر گرا تھا جس کے نتیجے میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس (اے پی) کی رپورٹ کے مطابق عراقی فوج کے ترجمان بریگیڈئیر جنرل یحییٰ رسول کا کہنا تھا کہ مذکورہ راکٹ مبینہ طور پر بغداد کے مشرقی حصے سے فائر کیا گیا تھا۔

اس سے قبل فوکس نیوز کو دیئے گئے انٹرویو میں امریکی صدر نے ایران کے ساتھ ہونے والے جوہری معاہدے کو ‘خوفناک شو’ قرار دیا۔

انہوں نے کہا کہ ‘میں نہیں چاہتا کہ ان کے پاس جوہری ہتھیار ہوں اور وہ ہمیں دھمکیاں دیں’۔

اشتہار


اپنا تبصرہ بھیجیں