سرگودھا: وزیراعظم کا ڈی ایچ کیو ہسپتال کا اچانک دورہ

وزیراعظم عمران خان نے سرگودھا میں ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر (ڈی ایچ کیو) ہسپتال کا اچانک دورہ کیا جس کے باعث انتظامیہ کی دوڑیں لگ گئیں۔

سرگودھا ڈی ایچ کیو ہسپتال میں وزیراعظم عمران خان کے دورہ کے دوران شہریوں نے شکایات کے انبار لگا دیئے۔

مریضوں اور ان کے لواحقین کی جانب سے وزیراعظم کو ہسپتال کے ڈاکٹروں اور عملے کے رویے کے خلاف شکایات کی گئیں۔

عمران خان نے شکایات سننے کے فوری بعد موبائل فون کے ذریعے صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد سے رابطہ کیا اور ان سے ناقص انتظامات اور ہسپتال کی صورتحال پر بات چیت کی۔

خیال رہے کہ مسلم لیگ (ن) کی حکومت میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) سربراہ عمران خان اور دیگر رہنماؤں کی جانب سے دعویٰ کیا جاتا تھا کہ مسلم لیگ کی حکومت پنجاب سمیت دیگر صوبوں میں صحت کی سہولیات فراہم کرنے میں ناکام رہی ہے۔

6 جنوری 2019 کو اس وقت کے چیف جسٹس سپریم کورٹ آف پاکستان میاں ثاقب نثار نے پاکستان کڈنی اینڈ لیور ٹرانسپلانٹ انسٹی ٹیوٹ (پی کے ایل آئی) کیس میں وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ریمارکس دیئے تھے کہ سپریم کورٹ کو آپ سے توقعات تھیں لیکن آپ نے شدید مایوس کیا اور اس کیس میں پنجاب حکومت کی نااہلی کو تحریری حکم کا حصہ بنا رہے ہیں۔

چیف جسٹس نے مزید ریمارکس دیئے تھے کہ حکومت نے 22 ارب روپے لگا دیے اور یہ ہسپتال نجی لوگوں کے ہاتھ میں چلا گیا اس کو واپس آنا چاہیے۔

اشتہار


اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں