تحریک انصاف کے رہنما کا لائیو پروگرام میں کراچی پریس کلب کے صدر پر تشدد

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے مقامی رہنما مسرور سیال نے سینئر صحافی اور کراچی پریس کلب کے صدر امتیاز فاران پر لائیو ٹی وی شو کے دوران حملہ کردیا۔

نجی چینل ‘کے 21’ کے پروگرام ‘نیوز لائن وِد آفتاب مغیری’ میں امتیاز فاران کی جانب سے بطور تجزیہ کار پشاور بس ریپڈ ٹرانسپورٹ کا معاملہ کھٹائی میں پڑنے سے متعلق بات کرنے پر مسرور سیال طیش میں آگئے جس کے بعد پہلے دونوں کے درمیان تلخ کلامی ہوئی اور پھر پی ٹی آئی رہنما نے سینئر صحافی پر حملہ کر دیا اور گالیاں بھی دیں۔

انہوں نے امتیاز فاران پر جانبدارانہ تجزیہ کرنے کا الزام لگایا۔

مسرور سیال کا کہنا تھا وہ میٹرو بسوں کے دیگر شہروں میں چلنے والے منصوبوں کو بھی معیشت اور عوام پر بوجھ سمجھتے ہیں۔

امتیاز فاران نے میڈیا کو بتایا کہ ‘مسرور سیال، میٹرو اور دیگر عوامی فلاح کے منصوبوں پر دی جانے والی حکومتی سبسڈی ختم کرنے کی بات کر رہے تھے، جس پر میں نے ان کی مخالفت کی اور کہا کہ غریب عوام کی بہتری کے منصوبوں پر سبسڈی ختم نہیں ہونی چاہیے۔’

ان کا کہنا تھا کہ ‘میری اس بات پر پی ٹی آئی رہنما آپے سے باہر ہوگئے، پہلے انہوں نے بدتمیزی کی اور پھر ہاتھ اٹھا دیا۔’

اشتہار


اپنا تبصرہ بھیجیں