انڈیا کا چاند پر پہنچنے کا مشن ناکام ہو گیا

بانڈیا کو چاند پر پہنچنے کے اپنے خلائی مشن میں بظاہر ناکامی کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ انڈین خلائی جہاز چندرائن 2 کی چاند گاڑی وکرم کا چاند پر لینڈنگ کرنے سے کچھ دیر پہلے زمینی رابطہ ٹوٹ گیا۔

انڈین خلائی ریسرچ آرگنائزیشن (اسرو) کے صدر کے سیون نے مشن کے بارے میں کہا ہے کہ ’چاند گاڑی وکرم منصوبے کے مطابق اتر رہی تھی اور چاند کی سطح سے 2.1 کلومیٹر دور سب کچھ معمول پر تھا۔ لیکن اس کے بعد اس کا رابطہ ختم ہو گیا۔ اعداد و شمار کا جائزہ لیا جائے گا۔ ‘

انڈین وقت کے مطابق اس سیٹلائیٹ کی رات 1:30 بجے سے 2.30 بجے کے درمیان چاند کے جنوبی قطب پر لینڈنگ متوقع تھی۔ انڈیا کا چندریان ٹو خلا میں چھوڑے جانے کے ایک ماہ بعد 20 اگست کو چاند کے مدار میں داخل ہوا تھا۔

اب سے پہلے کوئی ملک چاند کے اس حصہ پر نہیں گیا۔ اس سلسلے میں انڈیا کے وزیر اعظم نریندر مودی انڈین خلائی تحقیقاتی ادارے اسرو پہنچ چکے ہیں۔

اگر انڈیا کو اس مشن میں کامیابی حاصل ہو جاتی ہے تو وہ سابق سوویت یونین، امریکہ اور چین کے بعد چاند کی سطح پر لینڈنگ کرنے والا چوتھا ملک بن جائے گا۔

یاد رہے کہ انڈیا کے چاند کے پہلے مشن چندرائن 1 نے ریڈارز کی مدد سے سنہ 2008 میں چاند کی سطح پر پانی کی پہلی اور سب سے مفصل تلاش کی تھی۔

اشتہار


اپنا تبصرہ بھیجیں