افغان صوبے بلخ میں پولیس ہیڈ کوارٹر پر طالبان کا حملہ، 11 اہلکار ہلاک

افغان صوبے بلخ میں پولیس ہیڈ کوارٹر پر طالبان کے حملے میں 11 اہلکار ہلاک ہوگئے۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق افغانستان کے شمالی صوبے بلخ کے ضلع شورتپیا میں 400 سے زائد طالبان نے حملہ کردیا۔

افغان سیکیورٹی فورسز اور حملہ آوروں کے درمیان کئی گھنٹے تک مقابلہ جاری رہا جس میں دونوں طرف سے بھاری اسلحے کا استعمال کیا گیا۔

حکام کے مطابق حملے میں 11 پولیس اہلکار ہلاک ہوئے اور طالبان نے جاتے ہوئے پولیس ہیڈ کوارٹر کو آگ لگادی جبکہ 13 اہلکاروں کو اغواء کرکے لے گئے۔

افغان حکومت کے صوبائی ترجمان منیر فہد کا کہنا ہے کہ واقعے میں طالبان کو بھی بھاری نقصان اٹھانا پڑا ا ور متعدد حملہ آور ہلاک ہوئے ہیں۔

طالبان نے حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے ضلع شورتپیا پر قبضے کا دعوٰی کیا ہے۔

تاہم بلخ پولیس کے ترجمان نے طالبان کے دعوے پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ ضلع پر طالبان کا قبضہ کچھ گھنٹے تک ہی برقرار رہ سکا اور سیکیورٹی فورسز نے دوبارہ شورتپیا کا کنٹرول سنبھال لیا ہے۔

طالبان کی جانب سے یہ حملہ ایسے وقت میں سامنے آیا ہے کہ جب دو روز قبل ہی افغانستان میں صدارتی انتخاب ہوئے ہیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں