جے یو آئی کے مرکزی رہنما مفتی کفایت اللہ گرفتار

اسلام آباد: پولیس نے جمعیت علمائے اسلام (ف) کے اہم اور مرکزی رہنما مفتی کفایت اللہ کو آزادی مارچ کے حق میں اشتعال انگریز تقریر کرنے کے الزام میں گرفتار کرلیا۔

مانسہرہ کے ضلعی پولیس افسر نے مفتی کفایت اللہ پر الزام عائد کیا کہ انہوں نے گزشتہ روز ریلی میں لوگوں کو آزادی مارچ میں شرکت کے لیے اکسایا، کارنر میٹنگز کی اور چندہ جمع کیا تھا۔

ان کی گرفتاری سے متعلق جے یو آئی (ف) کے رہنما عبدالمجید ہزاروی نے تصدیق کی۔ انہوں نے بتایا کہ مفتی کفایت اللہ کو آج (اتوار) صبح ای الیون تھری کی مسجد طوبہ کے قریب سے گرفتار کیا گیا۔

عبدالمجید ہزاروی نے بتایا کہ مفتی کفایت اللہ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ایک دوست کے فلیٹ پر قیام پذیر تھے۔ جے یو آئی (ف) کے رہنما نے بتایا کہ مفتی کفایت اللہ کو مینٹیننس آف پبلک آرڈر (ایم پی او) کے تحت گرفتار کرکے ہری پور جیل منتقل کیا گیا ہے۔

دوسری جانب اسلام آباد پولیس نے مفتی کفایت اللہ کی گرفتاری سے متعلق خبروں کی تردید کی۔ اسلام آباد پولیس کے ڈی آئی جی آپریشنز نے کسی بھی قسم کی گرفتاری کی سختی سے تردید کرتے ہوئے کہا کہ پولیس نے مفتی کفایت اللہ کی گرفتاری کے لیے کہیں چھاپہ نہیں مارا اور نہ ہی کوئی گرفتاری کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں