Imran-Khan-Prime-Minister-Pakistan

وزیراعظم کی وفاقی سیکرٹریز کو نیب پر تحفظات ڈیڑھ ہفتے میں حل کرنے کی یقین دہانی

اسلام آباد: وزیراعظم نے وفاقی سیکریٹریوں کو یقین دلایا ہے کہ نیب سے متعلق ان کے تحفظات ہفتے ڈیڑھ ہفتے میں قانون سازی(آرڈیننس ) کے ذریعے حل کردیے جائیں گے۔

وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد وفاقی سیکریٹریوں نے وزیراعظم سے ملاقات کی جس میں انھوں نے نیب کی کارروائیوں پراپنے تحفظات کا اظہار کیا۔ وزیراعظم نے کہا کہ ملک اب ٹھیک راستے پر گامزن ہے، آپ لوگوں کو بھی تعاون کرنا چاہیے، سروس ڈیلیوری کے حوالے سے فیصلے کرکے عوام کو ریلیف دیں۔

اس پر وفاقی سیکرٹریز پھٹ پڑے اور کہا کہ سول سرونٹ ایکٹ کے تحت انہیں حاصل تحفظ نیب کے سپر لاء کی وجہ سے ختم ہوگیا ہے، ملکی مفاد میں فیصلوں پر افسران ہچکچاہٹ کا شکار اور ان کے ماتحت افسران کام کرنے سے گریز اں ہیں۔ وزیراعظم نے اس موقع پر یقین دلایا کہ وفاقی سیکریٹریوں کا یہ مسئلہ ہفتے ڈیڑھ ہفتے میں قانون سازی(آرڈیننس ) کے ذریعے حل کردیا جائیگا۔
ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ چند روز قبل بھی وفاقی سیکرٹریوں نے راولپنڈی میں ایک اہم شخصیت سے ملاقات میں نیب کے حوالے سے اپنے تحفظات کے بارے میں آگاہ کیا تھا۔

وفاقی سیکرٹریوں نے شاہد خاقان عباسی کی وزارت عظمٰی کے دور کے آخری دنوں میں نیب کی کارروائیوں کا ذکرکیا اوروزیراعظم سے کہا آپ نے نیشنل لائبریری میں ہونے والے اجلاس کے دوران تحفظ دینے کا وعدہ کیا تھا لیکن اس پر عمل نہیں کیا گیا۔
سیکرٹریوں نے سلمان غنی اور فواد حسن فواد کے ساتھ نیب کی طرف سے کی جانے والی مبینہ زیادتیوں کا بھی ذکر کیا اورکہا کہ کام کرنے والے افسروں پر نیب اپنی تلوار لٹکائے ہوئے ہے ،خوف کی فضا ء میں فیصلے نہیں لئے جاسکتے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں