امریکہ WHO کی رکنیت سے دستبردار

واشنگٹن: امریکی صدر نے چین کی طرف سے کورونا وائرس کے پھیلاؤ میں غیر ذمہ داری کا مظاہرہ کرنے کے ردعمل میں عالمی ادارہ صحت کی رکنیت سے فوری دستبرداری کا اعلان کرتے ہوئے WHO کے تمام فنڈز کوروکنے کا فوری حکم دے دیا ہے.

واضح رہے کہ امریکی حکام کی جانب سے چین پر کورونا وائرس کے پھیلاؤ کا مسلسل الزام عائد کیا جا رہا تھا، حالیہ دنوں میں امریکی سیکریٹری آف سٹیٹ اور سابق سی آئی اے چیف مائک پومپیو کی جانب سے بھی چینی حکام پر وائرس کے ممکنہ پھیلاؤ کا سنگین الزام عائد کیا اور کہا کہ ہمارے پاس اس بات کے واضح ثبوت ہیں جنہیں وقت آنے پر دنیا کے سامنے لایا جائے گا.

اس سے پہلے بھی WHO کی فعالیت کے بارے میں شکوک و شبہات کا اظہار کیا جا رہا تھا. امریکی حکومت کی جانب سے WHO کو 400 ملین امریکی ڈالر سالانہ ادا کیے جاتے تھے جو کہ WHO کے بجٹ کا 15 فی صد حصہ بنتا ہے.

امریکی ذرائع ابلاغ میں اس بات پر بھی بحث جاری ہے کہ صدرWHO کی رکنیت سے علیحدگی کا فیصلہ کرنے کا اختیار رکھتے بھی ہیں کہ نہیں. امریکہ میں صدارتی نظام کی وجہ سے صدر ہی سپریم لیڈر ہیں اور ماہرین کا کہنہ ہے امریکی عدالتیں عموما انتظامیہ کے فیصلے کو برقرار رکھتی ہیں.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں