راولپنڈی: مسلح ملزمان کی مخالفین کے گھر میں گھس کر فائرنگ، 9 افراد جاں بحق

راولپنڈی کے نواحی علاقے میال میں دو گروہوں کی پرانی دشمنی نے ایک ہی خاندان کے 9 افراد کی زندگیاں نگل لیں۔

پولیس کے مطابق مسلح افراد نے جمعے کی شب مخالفین کے گھر میں گھس کر اندھا دھند فائرنگ کی جس کے نتیجے میں 5 خواتین اور 4 بچے جاں بحق اور 3 بچے زخمی ہو گئے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ افسوسناک واقعے میں جاں بحق ہونے والے بچوں کی عمریں ایک سے تین سال کے درمیان ہیں۔

پولیس کے مطابق چند روز پہلے بھی اظہر اور رب نواز گروپ کے درمیان فائرنگ سے رب نواز گروپ کی ایک خاتون چل بسی تھی۔

ایس ایس پی آپریشنز کا کہنا ہے کہ پولیس نے سرچ آپریشن کے دوران 2 ملزمان کو گرفتار کر کے اسلحہ برآمد کر لیا ہے جب کہ مرکزی ملزم اور ساتھیوں کی گرفتاری کے لیے ایس ایس پی آپریشنز کی سربراہی میں سرچ آپریشن جاری ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے سی پی او راولپنڈی سے رپورٹ طلب کر لی ہے۔

چونترا تھانے کی حدود کے علاقے میال میں قتل ہونے والے ایک ہی خاندان کے 9 افراد کی میتوں کو پوسٹ مارٹم کے لیے ڈی ایچ کیو اسپتال منتقل کیا گیا اور پھر پوسٹ مارٹم کے بعد لاشوں کو ایمبولینسوں کے ذریعےگاؤں منتقل کیا گیا۔

سی پی او راولپنڈی احسن یونس نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ چونترا تھانے کی حدود میں پیش آنے والا واقعہ افسوسناک ہے، یہ بات غلط ہے کہ پولیس کا رسپانس نہیں تھا، اطلاع ملتے ہی جائے وقوعہ پر پہنچ گئے تھے۔

انہوں نے بتایا کہ ہمارے پاس 4 لوگ ہیں جن سے ہم تفتیش کر رہے ہیں، ہمارے پاس 120 لوگوں کی لسٹ ہے جو سرچ آپریشن کے دوران بنائی گئی۔

سی پی او راولپنڈی نے کہا کہ اس واقعے سے پچھلے واقعات کو نہ جوڑا جائے، ہماری مختلف ٹیمیں اس کیس کی تحقیقات کر رہی ہیں، رب نواز کے گھر فیاض کا قتل ہوا، یہ پہلی ایف آئی آر تھی، پھر رب نواز کی بیوی کا قتل ہوا جو دوسری ایف آئی آر تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں